Introducing the Family to a Foreign Friend - ایک غیر ملکی دوست سے اہل خانہ کا تعاف

In this lesson Ghias introduces the members fo his family to Arnold. Ghias and Amold are friends studying in class XII in Cambridge School. Ghias is the Head Boy of the School and Arnold is the Vice Head Boy. Ghias is a Pakistani and Arnold in a foreigner. On one Sunday, Arnold visits the house of his friend Ghias and is introduced to the members of Ghias' family. Arnold presses the door bell and Ghais opens the door. اس سق میں غیاث اپنے اہل خانہ کو آرنلڈ سے متعارف کراتا ہے۔ غیاث اور آرنلڈ دونوں دوست ہیں اور کیمبرج سکول میں بارہویں جماعت کے طالب علم ہیں۔ غیاث سکول کا ہیڈ بوائے ہےاور آرنلڈ وائس ہیڈ بوائے۔ غیاث پاکستانی ہے اور آرنلڈ غیر ملکی۔ ایک اتوار آرنلڈ غیاث کے گھر آتا ہے۔ جہاں اُس کا غیاث کے اہلے خانہ سے تعارف کرایا جاتا ہے۔ آرنلڈ دروازے کی گھنٹی بجاتا ہے اور غیاث دروازہ کھولتا ہے
 
Ghias: Hello, Arnold! How're you? غیاث: کیا حال ہے آرنلڈ کیسے ہو؟
 
Arnold: Hello' Ghias! How do you do? آرنڈ: تم سناو! کیا حال ہے؟
 
Ghias: I'm quite well. Thank you, what about you? غیاث: میں با لکل ٹھیک ہوں شکریہ۔ تم سناو؟
 
Arnold: So am I. I'm glad to see you. آرنلڈمیں ٹھیک ہوں۔تم سے مل کر بہت خوشی ہوئی۔
 
Ghias: Please come in. غیاث: برائے مہربانی اندر آ جاو۔
 
Arnold: Oh! It's beaitiful flat. آرنلڈ: ہوں! یہ تو بہت خوبصورت فلیٹ ہے۔
 
Ghias: It's three bedroom flat. Did you have any difficulty in finding our flat? غیاث: ہاں یہ تین بیڈ روم کا فلیٹ ہے۔تمہں ہمارا فلٹ تلاش کرنے میں کوئی دقت تو نہیں ہوئی۔
 
Arnold: Only a little. Not much. I had to ask the correct location only once from a shopkeeper. آرنڈ: معمولی سی ۔ کوئی زیادہ نہیں۔ مجھے صحیح جگہ معلوم کرنے کے لیے ایک دکاندار سے ایک بار پوچھنا پڑا تھا۔
 
Ghias: Would you like to be introduced to the members of my family. غیاث: کیا تم میرے گھر والوں سے ملنا پسند کرو گے۔
 
Arnold: It would be my pleasure. آرنلڈ : مجھےمسرت ہو گی۔
 
Ghias: Daddy, here is my friend Arnold. He is my calss-fellow. Arnold meet my father Mr. Jamal Pasha he is a famous author. غیاث:ابا جان یہ ہے میرادوست آرنلڈ۔یہ میرا ہم جماعت ہے۔ آرنلڈ میراے والد سے ملو۔ یہ ہیں مسٹر جمال پاشا۔ یہ ایک مشہور ادیب ہیں۔
 
Arnold: Good morning, Uncle. It's my pleasure to meet you. آرنلڈ: صبح بخیر چچا جان! مجھے آپ سے مل کر خوشی ہوئی۔
 
Mr. Pasha: We're very glad to meet you What's your father, Arnold? مسٹر پاشا: ہم بھی تم سے مل کر بہت خوش ہوئے ہیں۔ آرنلڈ تمہارے والد کیا کرتے ہیں؟
 
Arnold: Uncle, my father is a diplomat in the Brazilian Embassy. آرنلڈ! چچا جان میرے والد برازیل کے سفارت خانہ میں ایک سفارتکار ہیں۔
 
Mr. Pasha: Are you a Brazilian? مسٹر پاشا: کیا تم برازیلی ہو؟
 
Arnold: Uncle, we're of Armenian origin but now we're settled in Brazil. آرنلڈ چچا جان ہم بنیادی طور پر آرمینیا سے تعلق رکھتے ہیں لیکن اب برازیل میں آباد ہیں۔
 
Ghias: Arnold, come here and meet my mother Mrs. Samina Pasha. She is an Engish Lecturar in a Girls' College. Mummy, he is my friend Arnold. غیاث: آرنلڈ آو میری والدہ مسز ثمینہ پاشا سے ملو۔ یہ ایک گرلز کالج میں انگریزی کی لیکچرار ہیں۔ امی جان یہ میرا دوست آرنلڈ ہے۔
 
Mrs. Pasha: Hello, Arnold! How're you? مسز پاشا: کہو آرنلڈ؟ کیسے ہو؟
 
Arnold: Good morning, Aunty, I'm fine, thank you. How do you do? آرنلڈ: صبح بخیر چچی جان۔ میں ٹھیک ہوں۔ شکریہ۔ آپ کیسی ہیں؟
 
Mrs. Pasha: I'm fine. What's your mother, Arnold? مسز پاشا: میں ٹھیک ہوں۔ تمہاری والدہ کیا کرتی ہیں؟
 
Arnold: She also works in the Embassy. آرنلڈ: وہ بھی سفارتخانے میں کام کرتی ہیں۔
 
Mrs. Pasha: It will be nice meeting your parents. Please bring them when you come next. مسز پاشا: تمہارے والد سے ملاقات اچھی رہے گی۔ازراہ کرم اگلی مرتبہ انہیں بھی ساتھ لے کر آنا۔
 
Arnold: Definitely Aunty, they'd like to meet you too. آرنلڈ: ضرور چچی جان۔ وہ بھی آپ سے ملنا پسند کریں گے۔
 
Ghias: Now Arnold, please meet my elder brother Mr. Fiaz Pasha. He is doing final year BSc. Dear brother, he is my friend and calss-mate, Arnold. غیاث: آرنلڈ اب میرے بڑے بھائی سے ملو۔ یہ ہیں ۔فیاض پاشا اور یہ بھی ایس سی کے آخری سال میں ہیں۔ بھائی جان یہ ہے میرا ہم جماعت اور دوست آرنلڈ۔
 
Fiaz: Hello, Arnold! How do you do? فیاض: ہیلو آرنلڈ کیسے ہو۔
 
Arnold: I'm fine, thanks. آرنلڈ: میں خیریت سے ہوں ۔شکریہ۔
 
Ghias: Arnold, now meet my elder sister Miss Rubina Pasha. Dear sister, he's my friend and class-mate, Arnold. غیاث: آرنلڈ آب ملو میری بڑی بہن مس روبینہ پاشا سے۔یہ ایم اے کے آخری سال میں ہیں۔عزیز بہن یہ ہے میرا ہم جماعت اور دوست آرنلڈ۔
 
Rubina: Hello Arnold,how're you? روبینہ: آرنلڈ۔ کیسے ہو؟
 
Arnold: Hello, Miss Rubina! Nice meeting you. آرنلڈ: ہیلو مس روبینہ۔ آپ سے مل کر مسرت ہوئی۔
 
Mrs. Pasha: Please have a cup of tea with us, Arnold. مسزپاشا: آرنلڈ' ایک کپ چائے ہمارے ساتھ پیو۔
 
Arnld: No, thank you, Aunty; l'll be late. I've to go to the market for some shopping. آرنلڈ: جی نہیں شکریہ چچی جان مجھے دیر ہو جائے گی۔ مجھے ماکیٹ جانا ہے اور کچھ خریداری کرنا ہے۔
 
Mrs. Pasha: It's all right. Please keep coming. مسز پاشا: چلو ٹھیک ہے۔ ویسے تم آتے رہنا۔
 
Arnold: I'll, Aunty. Nice meeting you all Ghias: Please come again with your parents. آرنلڈ: جی ضرور آپ سب سے مل کر بہت آچھا لگا۔
 
Arnold: Surely, I'll. Bye bye. See you again. آرنلڈ: یقیناً خدا حافظ۔ پھر ملاقات ہو گی۔
 
Ghias: Bye bye, See you. غیاث: خدا حافظ۔ پھر ملیں گے۔