Conversation between Mother and Father - ماں اور باُپ کے درمیان گفتگو

This lesson contains cinvercation between the parents. The mother is an early riser. She has prepared tea for her husband, who is sound asleep. Their son and daughter are sleeping in the next room Not to awaken the children, the mother, with a cup of tea ia her hand quitly tries to wake up the father. اس سبق میں والدین کے درمیان گفتگو دی گئی ہے۔ ماں صبح کو جلد ی اٹھتی ہے۔ اس نے اپنی شوہر کے لیے چائے بنائی۔جو گہری نہیند سو رہا ہے۔ ان کا بیٹا اور بیٹی برابر والے کمرے میں سوئے ہوئے ہیں۔ ماں بڑی آہستگی اور خاموشی سے اپنے ہاتھ میں چائے کی ایک پیالی لیے ہوئے اپنے شاہر کو جگانے کی کو شش کرتی ہے تا کہ بچوں کی نیند خراب نہ ہو۔
 
Mother: Wake up dear, I've brought tea for you. ماں: جاگو جان! میں تمہارے لیے چائے لائی ہوں۔
 
Father: Good morning, darling. How lovely you look this morning! Thank you for the tea. Ah! that feels good. What time is it? باپ: صبح بخیر جانِ من! آج صبح تم کتنی پیاری لگ رہی ہو۔ چائےکے لیے شکریہ۔ہوں بہت آچھی لگ رہی ہے۔ وقت کیا ہوا ہے۔
 
Mother: It's already six, and there is hustle and bustle in the street. ماں: چھ بج چیکے ہیں اور گلی میں چہل پہل شروع ہو چوکی ہے۔
 
Father:That reminds me, I've a sales conference today at nine a.m. sharp at the Holiday Inn. My boss is flying in at about eight o'clock. I'll have to go to the airport to receive him. باپ : اس سے مجھے ےاد آیا ۔ آج میری ایک سیلز کانفرنس ہے ٹھیک نو بجے کی پرواز سے پہنچ رہا ہے اور مجھے اسے لینے کے لیے ائر پورٹ جانا ہے۔
 
Mother: Oh dear1 why don't you send one of your junior managers to receive him. ماں: اوہ جان!تم اپنے کسی جونیئر منیجر کو اسے لینے کیوں نہیں بھیج دیتے۔
 
Father: No, This is a very important meeting and then we have to discuss a few points also on our way back Darling, please take out my blue suit. I'll quiskly go for a shower. Is braekfast ready? باپ: نہیں یہ بہت اہم میٹنگ ہے اور ہمیں ائر پورٹ سے واپسی پر کچھ امور پر تبادلہ خیال بھی کرن ہے۔جان من ذرا میرا نیلا سوٹ تو نکال دو۔ میں جلدی سی غسل کرلوں۔ کیا ناشتہ تیار ہے؟
 
Mother: It will be ready by the time you finish your bath. ماں: جب تک تم نہاو یہ تیار ہو جائے گا۔
 
Father: O.K has the driver got up? If he has, ask him totake out the car from the garrage. باپ: ٹھیک ہے۔کیا ڈرائیور جاگ گیا۔ اگر وہ جاگ چکا ہو تو اسے کہو کہ گاڑی گیراج سے باہر نکال لے۔
 
Mother: O.K. but hurry up with your bath. ماں: ٹھیک ہے ۔لیکن زرا جلدی سے غئسل کر لو۔
 
Father: After early morning bath, one feels so fresh and relaxed. Is breakfast ready, dear? باپ: صبح سویرے غسل کے بعد آدمی خود کو کتنا تروتازہ اور ہلکا پھلکا محسوس کرتا ہے۔ جان!کیا ناشتہ تیار ہوگیا ہے۔
 
Mother: Yes' it is. I'm laying it on the table, come soon. ماں: جان! ہاں ہو چکا۔ میں اسے میز پر لگا رہی ہوں۔
 
Father: Just a minute. Ala! something smells good, but I won't eat much. I've to do a lot of talking inthe conference. باپ:بس ایک منٹ۔ آہا کتنی آچھی خو شبو آ رہی ہے۔ لیکن میں زیادہ نہیں کھاوں گا۔ مجھے آج کانفرنس میں بہت زیادہ گفتگو کرنا ہے۔
 
Mother: You and your conferences! Hope you don't pull up your sales people too hard, after all they are part of your sales achievements. ماں : ایک تو تمہاری کانفرنس ہی ختم نہیں ہوتی۔میرا خیال ہے کہ تم اپنے ماتحتوں پر زیادہ سختی نہیؐں کرتے ہو گے۔ آخر کار ان کی کامیابی ہی تمہاری کامیابی ہے۔
 
Father: My dear, for the sake of my boss, I've to pull up some people for some reason or the other. باپ:عزیز من! اپنے باس کی خاطر مجھے اپنے ماتحتوں پر کبھی کبھی اور کسی نہ کسی وجہ سے سختی کرنا پڑ جاتی ہے۔
 
Mother: By the way, when are you taking me and the children out for dinner at Holiday Inn. ماں : ویسے یہ تو بتاو کہ تم مجھے اور بچوں کو ڈنٹر کے لیے ہالیڈے ان کب لیجا رہے ہو۔
 
Father: I'll tell you a secret. I'm expecting a promotion.As soon as I get it, we will celebrate anywhere you like. باپ: میں تمہیں راز کی ایک بات بتاتا ہوں۔ مجھے اُمید ہے کہ میری ترقی ہونے والی ہے۔ جیسے ہی یہ ہوتا ہے ہم اس کا جشن جہاں تم کہو گئ وہاں منایئں گے۔
 
Mother: That's wonderful news, dear. I can hardly wait to hear it confirmed. ماں :یہ تو بہت آچھی خبر ہے۔ میں اس کی تصدیق کا شدت سے انتطار کروں گی۔
 
Father: Okay daer, I better go now. Has the driver brought out the car? باپ: آچھا جان!بہتر ہے اب میں چلوں۔ کیا ڈرائیور نے گاڑی باہر نکال لی ہے؟
 
Mother: Yes, he has . Poor man; he isn't feeling well. ماں : ہاں نکال تو لی ہے لیکن اس بچارے کی طبیعت ٹھیک نہیں ہے۔
 
Father: What happend? Yesterday I did notice he rather quiwt. If he isn't well, tell him not to worry. I'll drive the car myself. باپ: کیا ہوا؟ کل میں نے بھی محسوس کیا تھا کہ وہ کچھ چپ چپ سا ہے۔ اگر اس کی طبیعت ٹھیک نہیں تو اس کہو کہ بے فکر رہے میں گاڑی خود چلالوں گا۔
 
Mother: That would be nice, dear. He really looks ill. ماں یہ ٹھیک رہےگا۔ وہ اوقعی بیمار لگتا ہے۔
 
Father: O.K. then, tell him to take rest. I'll drive myself. Bye bye, darling. I'll be late tonight. باپ: ٹھیک ہے اسے کہو کہ آرام کرئے میں خود گاڑی لی جاوں گا ۔خداحافظ جان من۔ رات کو مجھے دیر ہو جائے گی۔
 
Mother: Bye bye, dear and all the best. I'll wait for you, to hear the good news of your promotion. ماں: خدا حافظ جان اور میری نیک خواہشات تمہارے ساتھ ہیں۔ میں تمہاری ترقی کی خوشخبری کا انتظار کروں گی۔