Between Two Professionals - دو پیشہ ور افراد کے درمیان

Zafar: Hello! Farroq. How are you, sir and how is your business going on? ظفر: ہیلو فاروق۔مزاج کیسے ہیں جناب؟ آپ کا کاروبار کیسا جا رہا ہے؟
 
Farooq: Thank God, it is going well. فاروق: اللہ کا شکر ہے۔ بہت اچھا جا رہا ہے۔
 
Zafar: Well, the season is in full swing these days. ظفر: ہاں، آج کل سیزن زوروں پر ہے۔
 
Farooq: When did you come to Lahore? فاروق: آپ لاہور کب آئے؟
 
Zafar: I have just reached. Actually, I was to busy some stationery and books for my shop. ظفر: ابھی آرہا ہوں ۔ دراصل مجھے اپنی دوکان کےلئے کچھ سٹیشنری اور کتابیں خرید نا تھیں۔
 
Farooq: Where do you busy it from? فاروق: آپ یہ کہاں سے خریدتے ہیں؟
 
Zafar: I buy the books for competitive exames from Dogar Publishers and the books for school kids from Dogar's Unique Books. ظفر: مقابلے کے امتحان کی کتابیں میں ڈوگر پبلیشرز اور بچوں کی کتابیں ڈوگرز یونیک بکس سے خریدتا ہوں۔
 
Farooq: And where do you buy the stationery from? فاروق: اور آپ سٹیشنری کہاں سے خریدتے ہیں؟
 
Zafar: I buy it from different shops. ظفر: یہ میں مختلف دکانوں سے خریدتا ہوں۔
 
Farooq: Everyone is worried about price-hike. فاروق: مہنگائی کی وجہ سے ہر کوئی پر یشان ہے۔
 
Zafar: There it is. But we can't do anything? ظفر: ہاں۔ واقعی لیکن ہم کیا کریں؟
 
Farooq: The things may take a happy turn. فاروق: ہو سکتا ہے کہ حالات بہتر ہو جائیں۔
 
Zafar: May it be so. ظفر: اللہ کرے۔
 
Farooq: Okay. Actually, nobody is at my shop. After you with permission. فاروق: او کے میں دراصل دکان چھوڑ کر آیا ہوں۔ اجازت چاہتا ہوں۔
 
Zafar: Best of luck. And I have also to consign my mershandise. See you. ظفر: اللہ بہتر کرے، مجھے بھی دراصل مال بلٹی کروانا ہے۔ پھر ملیں گے۔